معروف جاپانی سومو ریسلر کیوٹاکا سیوٹیکے المعروف شابوشی کورونا سے ہلاک

معروف جاپانی سومو ریسلر کیوٹاکا سیوٹیکے المعروف شابوشی کورونا سے ہلاک

جاپان میں معروف سومو ریسلر کورونا وائرس میں مبتلا ہونے کے بعد ہلاک ہوگیا۔ جاپان میں سومو ریلسرز کافی شہرت رکھتے ہیں اور یہ جاپان کے روایتی کھیل میں شمار ہوتا ہے۔ ایشیاء کے دیگر ممالک کی طرح جاپان میں بھی کورونا کے پھیلاؤ میں تیزی دیکھی جا رہی ہے اور حکومت نے وبا سے بچاؤ کے لیے ایک ماہ کے سٹیٹ ایمرجنسی کے اعلان سمیت سخت لاک ڈاؤن بھی نافذ کیا تھا۔
جاپان میں 13 مئی تک کورونا کے مریضوں کی تعداد بڑھ کر 16 ہزار تک جا پہنچی تھی اور وہاں ہلاکتوں کی تعداد 650 سے زائد ہوچکی تھی۔ برطانوی نشریاتی ادارے کی رپورٹ کے مطابق جاپان سومو ایسوسی ایشن نے تصدیق کی کہ معروف ریسلر 28 سالہ کیوٹاکا سیوٹیکے المعروف شابوشی کورونا کے باعث ہلاک ہوگئے۔

رپورٹ میں جاپانی میڈیا کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ کورونا کے باعث ہلاک ہونیوالے 28 سالہ ریسلر پہلی سپورٹس شخصیت ہیں۔

کورونا سے ہلاک ہونے والے ریسلر میں گزشتہ ماہ 28 اپریل کو کورونا کی تشخیص ہوئی تھی اور انہیں بعد ازاں ہسپتال منتقل کردیا گیا تھا۔ ہلاک ہونیوالے ریسلر کو انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں بھی رکھا گیا تھا تاہم وہ جان بر نہ ہوسکے اور کورونا کے باعث ان کے متعدد جسمانی اعضا نے کام کرنا چھوڑ دیا تھا۔ شابوشی کا شمار سومو کے معروف ریسلرز میں ہوتا تھا، انہوں نے 2007ء میں محض 15 سال کی عمر میں سومو ریسلنگ کا آغاز کیا تھا۔

حالیہ چند سال میں انہوں نے سومو ریسلنگ میں اچھا مقام حاصل کیا اور انہوں نے کئی حریفوں کو چت کرکے ریسلنگ میں 11ویں پوزیشن بھی حاصل کی۔ شابوشی میں کورونا کی تصدیق کے بعد ایک ہزار کے قریب سومو ریسلرز کا اینٹی باڈیز ٹیسٹ بھی کیا گیا تھا۔ اگرچہ جاپان میں خطے کے دیگر ممالک میں کورونا کے مریضوں کی تعداد کم ہے تاہم اس کے باوجود وہاں کیسز میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے اور حکومت نے وبا سے نمٹنے کے لیے سخت اقدامات اٹھائے ہیں۔

Related posts

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے